مرکزی مینیو کھولیں

ویکی شیعہ β

تبدیلیاں

محمد آصف محسنی قندہاری

2 bytes added, 10:38, 8 مارچ 2019
م
دینی تعلیم
شیخ آصف محسنی نے 1961ء میں اپنے چچا کی بیٹی سے شادی کی کہ جس سے تین بیٹے عبد اللہ، حفیظ اور حبیب پیدا ہوئے۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref> آپ کی پہلی بیوی کا انتقال ہو چکا ہے۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref>
==دینی تعلیم==
آصف محسنی نے پہلے چھ ماہ تک قندھار میں دینی مقدماتی علوم کی تعلیم حاصل کی۔ پھر افغانستان کے شہر غزنی کے ایک دیہات جاغوری چلے گئے اور 8 ماہ کی قلیل مدت میں [[ہدایہ]]، [[سیوطی]] ، [[حاشیہ ملا عبد اللہ]] اور کچھ حد تک [[معالم]] و [[لمعہ دمشقیہ]] جیسی کتابیں پڑھیں۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref>
محمد آصف محسنی [[3جولائی]] 1953ء میں [[نجف]] تشریف لے گئے اور 3 سال سے بھی کم مدت میں سطوح کی باقیماندہ تعلیم کو مکمل کیا۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref> چنانچہ وہ خود کہتے ہیں کہ حوزے کی تعطیلات میرے لیے خوش آئند نہیں ہوتی تھیں اور چھٹیوں کے دوران بھی دروس میں مشغول رہتا تھا۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref>
آپ نے [[مطول]] شیخ محمد علی [[مدرس افغانی]]، [[کفایہ]] کی جلد اول [[شیخ مجتبی لنکرانی]]، کفایہ کی جلد دوم صداری بادکوبہ ای، [[رسائل]] [[شیخ کاظم یزدی]] اور [[مکاسب]] چند دیگر اساتذہ کے پاس مکمل کیں۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref> شیخ آصف محسنی فلسفے میں بھی دلچسپی رکھتے تھے تاہم [[نجف]] میں [[فلسفے]] کی تدریس پر پابندی کے پیش نظر ذاتی طور پر مطالعہ کرنے لگے اور کتاب [[باب حادی عشر]] پر حاشیہ تحریر کیا۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref> دیگر کتب منجملہ [[اسفار]]، [[حکمت الاشراق]] اور کلامی کتب کا بھی مطالعہ کیا۔<ref>«گفتگوی اختصاصی با آیت اللہ شیخ محمد آصف محسنی»۔</ref>
1,754
ترامیم