مرکزی مینیو کھولیں

ویکی شیعہ β

تبدیلیاں

حضرت علی اور حضرت فاطمہ کی شادی

1 byte added, 11:07, 12 فروری 2018
حضرت فاطمہؑ کا ہاتھ مانگنا
بعض مہاجرین نے حضرت علیؑ سے کہا: کہ آپ حضرت فاطمہؑ کا رشتہ کیوں نہیں مانگتے؟ آپؑ نے جواب دیا: ''خدا کی قسم کے میرے پاس کچھ نہیں ہے'' تو مہاجرین نے کہا کہ پیغمبرؐ آپ سے کچھ نہیں مانگیں گے. آخر کار علیؑ رسول خداؐ کے پاس گئے لیکن شرم کی وجہ سے اس بارے میں کوئی درخواست نہ کی. تیسری بار آخر آپؑ نے اس بارے میں حضرت پیغمبرؐ سے بات کی. پیغمبرؐ نے فرمایا: کیا تمہارے پاس کوئی چیز ہے؟ علیؑ نے فرمایا: ''یا رسول اللہؐ ایک زرہ کے علاوہ کچھ نہیں ہے''. حضرت پیغمبرؐ نے حضرت فاطمہؑ کی ساڑھے بارہ اوقیہ سونا حق مہر رکھنے کے بعد حضرت علیؑ کے ساتھ شادی کر دی اور زرہ بھی حضرت علیؑ کو واپس لوٹا دی.<ref> اعلام الوری، ج۱، ص۱۶۱؛ تاریخ تحقیقی اسلام، محمد ہادی یوسفی غروی، ج۲، ص۲۵۱.</ref>
کہا گیا ہے کہ بعض مہاجرین نے اس بات پر شکوہ کیا تو حضرت پیغمبرؐ نے فرمایا: ''فاطمہ کا ہاتھ علی کے ہاتھ میں، میں نے نہیں دیا بلکہ [[خدا]] نے دیا ہے''. <ref> تاريخ يعقوبي، ج۲، ص۴۱.</ref>
 
==نکاح کا خطبہ==
ابن شہر آشوب نے مناقب آل ابی طالب میں لکھا ہے کہ حضرت فاطمہؑ کی شادی کے وقت حضرت پیغمبرؐ منبر پر گئے اوریہ خطبہ ارشاد فرمایا:
15,983
ترامیم